بھمبر (وائس آف کشمیر نیوز)ڈپٹی کمشنر بھمبر راجہ قیصر اورنگزیب خان کی زیر صدرات اہم اجلاس ہوا،جس میں ضلع بھر کے انتظامی معاملات،غیر قانونی تعمیرات کی روک تھام،تجاوزات کے تدارک و سدباب, سرکاری دفاتر میں ملازمین کی حاضری اوقات کار کی پابندی،ضلعی افسران کے روزانہ کی بنیادپر ضلع چھوڑنے پر پابندی ,شہر کے ماسٹر پلان کا جائزہ،ٹاسک فورس کے قیام،سرکاری دفاتر اراضی ریکارڈ کے حوالہ سے صدر آزاد کشمیر کی طرف سے تشکیل دی جانے والی 7رکنی کمیٹی کو متحرک کرنے،بلدیہ اور ضلع کونسل کی حدود میں صفائی ستھرائی کا بہترین انتظام, شاہرات پر کنسٹرکیشن میٹریل پھینکنے پر پابندی،شاہرات کے ساتھ نکاسی آب سمیت دیگر معاملات پر غور کیا گیا،تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر بھمبر راجہ قیصر اورنگزیب خان کی زیر صدرات ہونے والے اجلاس میں ایس پی چوہدری ذوالقرنین سرفراز، اے سی سردار فیصل مغل،اے سی سماہنی حافظ محمد علی،اے سی برنالہ محمد اقبال حسن،ڈی ایچ او ڈاکٹر محبوب احمد،ایم ایس ڈاکٹر شہزاد غضنفر، ایکسیئن عمر حیات خان،ایکسین طاہر یاسین،ایکسین مظہر حسین،ایکسیئن طاہر محمود بٹ،ڈی ایس پی علی ڈار،ڈی ڈی عامر زیب،اے ڈی جاوید اقبال ریسکیو،ڈی او ایجوکیشن محمد اسحاق مغل،اے ڈی طاہر اقبال،ڈی ایف او عابد حسین،ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفیسر عدنان مختار،ڈی او پاپولیشن صارم علی خان،چیف آفیسر بلدیہ حافظ عقیل احمد،اے ڈی لائیو سٹاک ڈاکٹر توقیر احمد چیف آفیسر بلدیہ چوہدری اسحاق،راجہ طاہر اقبال سپر نٹنڈنٹ ملک شمعون،نائب تحصیل دار راجہ اعجازودیگر نے شرکت کی .اجلاس میں سپیکر قانون ساز اسمبلی چوہدری انور الحق کی ہدایت پر مختلف انتظامی معاملات کا جائزہ لیا گیا،صدر آزاد کشمیر کی طر ف سے تشکیل دی جانے والی کمیٹی کو متحرک کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ چیف سیکرٹری تمام تر امور کی نگرانی کر رہے ہیں،کمیٹی 7 اگست تک حتمی رپورٹ دے گی اور 7 اگست تک تمام سرکاری ادارہ جات اپنی پراپرٹی،وسائل کے حوالے سے کمیٹی کو آگاہ کریں گے،کمیٹی کا بنیادی مقصد سرکاری اراضی کا تحفظ،تجاوزات کا خاتمہ،ناجائز قبضے کی واگزاری،ماسٹر پلان کا جائز ہ لے گی،تمام سرکاری اداروں کے سربراہان اس بات کو نوٹ کرلیں کہ 7 اگست تک اراضی،ریکارڈ،دفتری پراپرٹی ریکارڈ کو فوری طور پر ڈپٹی کمشنر آفس ارسال کریں 7 رکنی کمیٹی کے چئیرمین،ڈپٹی کمشنر ہوں گے،جس ادارے نے ریکارڈ نہ بھیجا اسکے بعد ضلعی سربراہ اسکا خود ذمہ دار ہو گا،ڈپٹی کمشنر نے محکمہ شاہرات کے ایکسئین کو ہدایت کہ 2 ایام کے اندر فوری طورپر نکاسی آب بحوالہ شاہرات مرتب کریں اور ارسالگی کے ساتھ پلان تشکیل کریں افرادی قوت اور دیگر وسائل کے حوالے سے رپورٹ مرتب کریں،شاہرات ڈویژن نوٹ کرلے کہ روڈ پر پڑے کسی میٹریل سے اگر حادثہ ہوا تو اسکا ذمہ دار محکمہ ہو گا،ضلع کونسل اور بلدیہ اپنی حدود میں صفائی کا موثر انتظام کریں،میونسپل کمیٹی ٹاؤن کمیٹیاں صفائی پلان تشکیل دیں،2 روز میں رپورٹ دیں،ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ہمیں سرکاری اوقات کار پر پابند ہو نا ہو گا،روزانہ کی بنیا پر سربراہ ادارہ کے ضلع سے باہر جانے پر پابندی ہو گی،سرکاری گاڑیوں کے استعمال کے حوالہ سے بھی رپورٹ مرتب کریں،ڈی او ایجوکیشن سکولز کی لسٹ فراہم کریں،تجاوزات رپورٹ دیں،بلدیہ ماسٹر پلان کے حوالے سے بلڈنگ شعبہ سے مل کر رپورٹ دیں.ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ سپیکر اسمبلی نے کہا ہے کہ سب افسران میرٹ پرکام کریں،اگر کوئی میرا عزیز بھی قانون کی خلاف ورزی کرے اسکے خلاف بھی کاروائی کریں۔