اسلام آباد ( ادریس احمد اعوان سے) وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر سردار تنویر الیاس خان نے بجلی کے بلات میں فیول ایڈجسٹمنٹ اور اعلان کردہ ٹیرف کے مغائر بلات کے اجراء کا نوٹس لیتے ہوئےمحکمہ برقیات کو احکامات جاری کیے ہیں کہ ایک سال کے لیے بجٹ تقریر میں اعلان شدہ فکس ٹیرف برقرار رکھا جائے اور احکامات کے برعکس بجلی کے بلات جاری کرنے والے ذمہ داران کے خلاف تادیبی کارروائی کی جائے۔ بجلی کے بلات میں من پسند فیول ایڈجسٹمنٹ اور ٹیرف کے تحت صارفین کو ذہنی اذیت پہنچائی گئی جو ناقابل برداشت ہے۔احتجاج عوام کا حق ہے تاہم اپیل ہے کہ دوران احتجاج سرکاری املاک کو نقصان نہ پہنچایا جائے۔موجودہ مہنگائی کےمشکل ترین دور میں عوام پربجلی بل گرانا صریحاً زیادتی کے مترادف ہے جس کا ازالہ کیا جا رہا ہے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ بجلی کے بلات کی مد میں صارفین کو تنگ نہ کیا جائے اور حکومتی منظوری کے بغیر ٹیرف میں کوئی ردوبدل نہ کیا جائے اور ایک سال کے لیے آزاد کشمیر میں فیول ایڈجسٹمنٹ سمیت کوئی اضافی ٹیکس نہیں لگے گا اور نہ ہی بجلی کی قیمتوں میں اضافہ ہو گا۔صارفین سے وصول کیے گئے فیول ایڈجسٹمنٹ اور اضافی قیمتیں آئندہ بلات میں ایڈجسٹ کی جائیں گی۔پورا سال بجلی کے فکس ٹیرف سمیت عوام سے کئے گئے تمام وعدے پورے کئے جائیں گے۔اس سلسلہ میں حکومت آزاد کشمیر نے بجلی کے بل کی ادائیگی کی تاریخ میں توسیع بھی کی ہے